زندگی!!۔

کبھی کبھی زندگی میں ایسے موڑ آتے ہیں کہ آپ حیران پریشان بس اسی بارے میں سوچتے رہتے ہو، پر اس بارے میں بات نہیں کرنا چاہتے، بلکل ایسا ہی ابھی میرے ساتھ ہورہا ہے، دل میں کچھ ہے ذہن میں کچھ ہے۔۔ اور زبان ایک ہی بات کرتی ہے، یا اللہ تو مدد کر۔۔ خیر تھوڑا سا اپنے آپ کو پرسکون کرنے کے لئے کچھ اشعار پڑھے تھے وہ پوسٹ کر رہی ہوں۔۔ دعائوں میں یاد رکھنے کی کوشش کیجیے گا پلیز۔۔

مجھے ایسا لطف عطا کیا جو نہ ہجر تھا نہ وصال تھا
میرے موسموں کے مزاج داں تجھے میرا کتنا خیال تھا
کبھی موسموں کے سراب میں کبھی پام و در کے عزاب میں
وہاں عمر میں نے گزار دی جہاں سانس لینا محال تھا۔
—–
آسان تو نہیں اپنی ہستی سے گزر جانا
اترا جو سمندر میں دریا تو بہت رویا
جو شخص نہ رویا تھا تپتی راہوں میں
دیوار کے سائے میں بیٹھا تو بہت رویا

—–
ab kuch roman urdu mein hain jis ko mujhey urdu mein transfer kerna ka koi dil nahi hai, so please bear it.
—–
Faislay ki raat hai aur lab khamosh hain
aisa bhi kia howa hai keh sab khamosh hain

sar-bazm kion bhar ayein meri ankhain
main kia kahon ke saray hi sabab khamosh hain

apni safai main tu sabhi ney kuch na kuch kaha
baat mujh per ayei hay tu sab khamosh hain

lazim tu nahi honton hi say har baat kahi jaye
ankhon main meri jhank lo, woh kab khamosh hain?

main nay suna tha gulshan mein bahar ayei hay
phool, chirya, fizayein kion ab khamosh hain?
—–
kaha sathi koi dukh dard ka tayar karna hay
jawab aya yeh darya akeley par karna hay

kaha rasta baksha hay na hamwar kion mujh ko
jawab aya tujhey har rasta hamwar karna hay
—–
Last but not the least..

TuuTe huye dilo.n kii duaa mere saath hai
duniyaa terii taraf hai Khudaa mere saath hai

aaj ke daur me.n ai dost ye ma.nzar kyuu.N hai
zaKhm har sar pe har ik haath me.n patthar kyuu.N hai

jab haqiiqat hai ke har zarre me.n tuu rahataa hai
phir zamii.n par kahii.n masjid kahii.n ma.ndir kyuu.N hai

apanaa a.njaam to maaluum hai sab ko phir bhii
apanii nazaro.n me.n har insaan sika.ndar kyuu.N hai

zindagii jiine ke qaabil hii nahii.n ab “Faakir”
varnaa har aa.Nkh me.n ashko.n kaa sama.ndar kyuu.N hai

دعائوں کی طلبگار
اللہ نگہبان
عائشہ۔

12 thoughts on “
زندگی!!۔

  1. عائشہ جی ! ہم تو دعا ہی کر سکتے ہیں کہ اللہ کی مشکلوں کو آسان کرے۔
    بقول غالب ۔۔ مشکلیں اتنی پڑی مجھ پہ کہ آسان ہو گئییں ( ٹھیک طرح یاد نہیں)

  2. Iftikhar Ajmal: بلکل آپ نے ٹھیک کہا ، وہی ہمیں دکھوں سے نکلنے والا ہے بس بندے نے صبر اور دعا کرنا ہے، شکریہ دعائوں کا :)۔

    منیر احمد طاہر:
    بہت بہت شکریہ دعائوں کا، جی بلکل غالب نے یہ شعر کہا ہے اور مجھے پسند بھی بہت ہے۔

  3. آپ ابھی سے اتنی خوفناک شاعری پڑھتی ہو، آگے پتہ نہیں کیا ہو گا!
    امید ہے کہ معاملہ جو بھی ہے، خوشگوار انداز میں حل ہو چکا ہو گا۔ نہیں ہوا تو کوئی بات نہیں، اللہ میاں ہیں نا!

    Take care 🙂

  4. ہاہاہا! صحیح کہا آپ نے، پر آگےکی کس کو فقر ہے؟ حال اچھاہے مستقبل بھی انشاءاللہ اچھا ہوگا 🙂 یہ تو بس کبھی کبھار چلتا ہے، اور بیشک اللہ تعالی ہے نا! تو کس چیز کا غم؟

    Take Cares 🙂 اللہ نگہبان!۔

  5. مھترمہ زندگی اتنی دکھوں سے بھری نہیں۔ خوشیاں تلاش کرنے سے ملتی ہیں اور دکھ خود آپ کے پاس آتے ہیں۔ یہ تو آپ کی مرضی ہوتی ہے کہ آپ کس کام کو آسان سمجھتے ہیں۔
    خدا سے دعا ہے کہ آپ بھی خوش رہنا سیکھ سکیں۔
    والسلام

  6. Jay:شکریہ۔
    امانت علی گوہر: جناب شائد آپ کو غلط فہمی ہوئی ہے، الحمداللہ میں بہت خوش ہوں، کبھی کبھار آزمائشیں آجاتی ہیں اس کا یہ ھر گز مطلب نہیں کہ میں خوش نہیں، رب تعالی نے مجھے بہت نوازا ہے اور نواز رہا ہے، مجھے کوئی دکھ نہیں ہے اللہ کے کرم سے۔۔
    میری کوئی بات اگر آپ کو بری لگی ہو تو میں معذرت چاہتی ہوں۔
    اللہ نگہبان۔
  7. Aysha ji aap baut hi acha likhti hain…

    Aaj kal main bhi kuch aisi hi kafiat ka shikaar hoon jo dil main rahay to ziada bahtar hai, chah kar bhi izhaar karnay ki himmat hi nahi hoti. Dua go hoon kay aap ki paraishanian simat jain.
    Dua main yaad rakhain

  8. Gul: Shukria bohut bohut!, Meri Rab se yehi dua hai ke app ki bhi paraishanian door hojayen jald az jald (ameen), bohut bohut shukria duaon ka :)!

    Apna khayal rakhiye ga.. kion ke app ke parents, doston aur sab ko app ki zaroorat hai 🙂

    Allah Nigh-e-Baan!

Leave a Reply