ہم اور ہمارے کام۔۔۔

Courtesy by Jang.Com.Pk!

Date: Monday, January 09, 2006 جنوبی ایشیا

بھارت: الٹرا ساؤنڈکی بدولت ایک کروڑ بچیوں سے چھٹکارا

پیرس …جنگ نیوز… ایک تحقیق کے مطابق الٹرا ساؤنڈ سے نومولودکی جنس کا تعین اور اولاد نرینہ کی فطری فوقیت کے باعث بھارت میں گزشتہ دو دہائیوں کے دوران تقریباً ایک کروڑ بچیوں کو جنم لینے کا موقع نہ مل سکا۔ کینیڈا اور بھارت کے تحقیقی ماہرین کے مطابق اسقاط حمل کے ذریعے لڑکی سے نجات حاصل کرنے کا رجحان تعلیم یافتہ خواتین میں بہت نمایاں ہے۔ اقوام متحدہ کے آبادی سے متعلق فنڈکی ایک رپورٹ میں افغانستان، چین، نیپال، پاکستان اور جنوبی کوریا میں بھی اسی نوعیت کے مسائل کی نشاندہی کی گئی ہے۔

اس کے آگے میں کیا کہوں؟–

8 thoughts on “
ہم اور ہمارے کام۔۔۔

  1. اجمل انکل: بلکل، کس سے کریں شکوہ؟

    شعیب صفدر: میری والدہ نے بھی پڑھ کر یہی کہا، عرب کے لوگ یہ کرتے تھے جہالت کی وجہ سے پر آج ہم پڑھ لکھ کر وہی کر رہے ہیں۔۔

    اللہ ہم سب کو نیک ہدایت دیں، آمین!۔

  2. Ayesha! I’ve heard so many brutal cases and stories about female infantries in India but it made me too much shocked about Pakistan. See, at one end they talk about progressive pakistan without identifying these maiming territories in the country to erode it.

  3. افسوس ناک۔ اسلام نے عرب سے سب سے پہلے اسی چیز کا خاتمہ کیا تھا۔

    بحر حال عید مبارک اور مزید یھ کھ ھم سب کو ان معصوم بچیوں کے لئے دعاے مغفرت کرنا چاہیئے کیونکہ اللہ کے پیغام کے مطابق وھ پاک ھیں اور اللہ ان کے ماں باپ کو ھدائت دے۔

  4. Adnan: bhai it doesn’t matters where it was published first, the thing matters is the news.. which is yes a BAD ONE!

    Gul: I just hate double-standards, believe me they are liers and doglay.

    ج جنجوعہ: بلکل۔۔پر ابھی تک یہ چیز ختم نہیں ہوئی ہے یا یوں کہنا چاہیئے کہ ہم خود ختم کرنا نہیں چاہتے، آپ کو بھی عید بہت بہت مبارک ہو۔

    Ameen to you prayers!

Leave a Reply