Pasand apni apni..!

کچھ اشعار جو دل کو اچھے لگے 🙂

~~
آسیب زدہ گھر کا میں وہ در ہوں محسن
دیمک کی طرح کھا گئی جسے دستک کی تمنا

~~
میرے ہاتھوں کی لکیروں میں یہ عیب چھپا ہے محسن
میں جس شخص کو چھولوں وہ میرا نہیں رہتا

~~
کون سمھجتا ہے بجھی لڑکیوں کے دکھ
بس مائیں جانتی ہیں ، اپنی بیٹوں کے دکھ
چاند کیا جانے گا بھیگے آنچلوں کے بھید
چاند کیا سمجھے گا کھلی کھڑکیوں کے دکھ

7 thoughts on “Pasand apni apni..!”

Leave a Reply