Yaad -e- Maazi. .

کتنی باتیں بھولیں؟ کتنی یاد رکھے؟ کیا کریں؟ کیا نہیں؟

کونسی چاند رات؟ کونسی عید؟ کونسا تہوار؟۔۔۔ لگتا ہے جیسے دل ہی مر گیا ہو۔۔

رات لیٹو تو وہ منظر آنکھوں کے سامنے سے ہٹتے نہیں۔۔، کچھ بھی بھلایا نہیں جاسکتا۔۔

ماں کو تسلی دیتے ہوئے کوشش ہوتی ہے میں نہ روؤں۔۔ پر رات ہوتے ہی۔۔ اکیلے میں خوب چیخ چیخ کر رونے کا دل کرتا ہے۔۔

پر پھر ۔۔ نہیں رو سکتی۔۔

دعا کریں مجھے سکون اور صبر آئے۔۔

یاد ماضی عذاب ہے یا رب، چھین لے مجھ سے حافظہ میرا۔۔۔

14 thoughts on “Yaad -e- Maazi. .”

  1. خوشیاں تو چھوٹی چھوٹی تتلیاں ہوتی ہیں جو محبتوں کے گلوں پر آسرا کرتی ہیں اگر نفرتوں کے کانٹوں سے گزر ہو تو کنارہ کشی اختیار کر لیتی ہیں

    عید کا مطلب خوشی ہے جو کہ ہر مسلم کو منانے کا حق ہے مگر انسان کو اچھے وقت کو یاد کرنا چاہیے ؛ حالات چاہے کیسے بھی ہوں اپنی یادوں کو صرف اچھی سمت جانے دیں ؛ ورنہ زندگی اذیت اور تکالیف سے بھری پڑی ہے ۔ آپکی خدمت میں دو عدد لنک لکھے ہیں اگر وقت اجازت دے تو ضرور پڑھ لیجیے گا ؛ میں کبھی دوسروں کے بلاگ پر کمنٹس نہیں دیا کرتا مگر اپکی تحریر سے جو لہو ٹپک رہا تھا اسے مرہم دینے چلا آیا؛
    جان پہچان تو نہیں مگر بلاگر ہونے کے ناطے میری طرف سے عید مبارک

    http://altafgohar.wordpress.com/2009/11/05/%D9%BE%DB%8C%D8%A7%D8%B1-%DA%A9%DB%8C-%D8%B1%D8%AA%DB%8C%DA%BA/

    http://altafgohar.wordpress.com/2009/10/31/%D8%B1%D8%B4%D8%AA%DB%92-%DA%86%D8%A7%DB%81%D8%AA%D9%88%DA%BA-%DA%A9%DB%92-2/

  2. was about to leave silently… like some1 duzn’t want to interrupt one who is in grief… then thought its not fair… May Allah bless you and your family with all the happiness of this world and hereafter and may Salman be enjoying a great 2nd life.

  3. عاشہ پڑھ کر تھوڑا دکھ بھی ہوا آپ نے بالکل درست کہا کہ عجیب سا وقت آ گیا ہے مایوسی اور بے حسی نے اپنا دیرا ڈال رکھا ہے۔لیکن خوشی ہمارے اپنے ہاتھ میں ہے اگر ہم چاہیں تو آپ اپنے آپ کو دکھی نہ کریں اور کوشش کریں اپنی کسی دوست عزیز کے ساتھ کچھ وقت گزاریں اگر باہر نہیں جاسکتیں تو ان کو گھر بلووا لیں کچھ مل کر پکانے کی کوشش کریں۔ ویسے رونا بہت ضروری ہے رو لیا کریں من کا بوجھ ہلکا ہو جاتا ہے اللہ پاک سے یہی دعا ہے وہ ہماری ہر مشکل آسان کرئے اور خوشی نصیب کرئے آمین
  4. اللہ تعلی آپ کو آپ کی فیملی کو حمت دے ۔۔ بھلانا واقعی مشکل ہوا کرتا ہے ۔۔ پر یہ وقت ہے جو پھر آزمائیش لاتا ہے ۔

    آپ کے سکون کے لیے دعا گو ۔

  5. کل ميں نے يہ بلاگ پڑھا ابھی کمنٹس کرنے ہی لگی تھی کہ مياں آ گئے تو مجھے کرسی چھوڑنی پڑی گھر ميں دراصل تين ہی کرسياں ہيں ان ميں سے طاقتور والی کمپيوٹر کرسی ہے جو طاقتور بندے کے پاس ہوتی ہے صرف ٹوائلٹ کے ليے اٹھتے ہيں دس بارہ مرتبہ اسی دوران ميں ايک بلاگ پڑھ ليتی ہوں يا ايک تبصرہ کر سکتی ہوں يہ تو تھی ميری حالت ذار جو شادی کے بعد عموما ہوا کرتی ہے اللہ آپکو اس سے بچائے بلکہ اپني بہنوں کو تو ميں شادی سے ہی بچاؤ کی دعائيں ديتی ہوں ہاں تو ميں کہہ رہی تھی پريشان رہنا يا ماضي کو ياد کرتے رہنا کسی پريشانی کا حل نہيں عرصہ پانچ سال پہلے جب ميں پاکستان ميں ہوا کرتی تھی ہر وقت پريشان رہنا اگر کوئی پريشانی نہ ہو تو خود بنا بنا کر پريشان رہنا پھر اللہ پاک نے مجھے فرانس آنے کا موقع ديا تو پتہ چلا يہ تو کوئی جنت نما ہے لوگوں کی اپنی بنائی ہوئی ايسا نہيں کہ انکو کوئی پريشانی نہيں مگر کوئی بندہ اس پريشانی کو اپنے اوپر مسلط نہيں کرتا مثلا يہاں بہت سے سنگل پيرنٹس پائے جاتے ہيں جن کی اکثريت خواتين ہيں جو جاب بھی کرتی ہيں اور بچے بھی ايسے سنبھالتی ہيں کہ ہماري ويليوں سے دس گنا اچھے گھر باہر کے سارے کام خود مگر آج تک ميں نے کسی کو پريشان نہيں ديکھا رات گئی بات گئی اسکے برعکس پاکستان ميں ميری ايک کزن کی طلاق ہوئے نو سال کا عرصہ گزر گيا آج بھی دن ميں دو مرتبہ بھی فون کروں تو اسی کا رونا دھونا جبکہ ميں نے تو اپنی زندگی کا اصول بنا ليا ہے خس کم جہاں پاک جتنے کم رشتہ دار اتنی کم مصيبتيں کسی کو ميں کيوں اتنی اہميت دوں کہ اسکے ليے رونا کر کے اپنی صحت خراب کروں دل کو اتنا مضبوط کر ليا ہے کہ ہر عيد پر چھوٹی بہنوں کا رونا ديکھ کر بھی نہيں پگھلتا پانچ سال سے واپس نہيں گئی اور نہ جانے کا ارادہ ہے ميں تو حيران ہوتی ہوں ادھر بعض فورمز پر پچاس سے ستر سال کی عمر کے لوگ اپنی ماؤں کو ياد کر کر کے رو رہے ہوتے ہيں بھلا جو گزر گيا اسکا پيچھا چھوڑو اور آگے کی سوچو زندگی کا اگر کوئی ريورس گئير ہوتا تو ميں اس مقام پر لے جاتی جہاں ميں جاب تو کرتی تھی مگر شادی نہ ہوئی تھی نرے مسئلے مسائل اور جھنجٹ کيسا خوش پھر رہا ہے سارا يورپ کلو کلے سارے تو بس آج سے سارے مسائل آپ نے خود ختم کرنے ہيں کسی قسم کی ايموشنل بليک ميلنگ ميں نہيں آنا مجھے تو جو بھول جائے اس پر ميں بھی سو دفعہ – – – – بھيجتی ہوں بس چند دوستيں بنا رکھی ہيں وہی عزيز ہيں آپ بھی ايسا ہی کريں يقين مانيں بہت خوش رہيں گی
  6. Asma: بہت بہت شکریہ، پر بہن یہاں بات میں اپنے بھائی سلمان کی کررہی ہوں، جن کا حال ہی میں انتقال ہوا ہے۔۔۔ اور جو چھوڑ جاتے ہیں آپ لاکھ کوشش کرو بھولا نہیں سکتے۔۔۔
  7. اللہ آپ کو اور آپ کے گھر والون کو ہمت او صبردے بیٹا ہو یا بھاءی انکو بھلانا بہت ہی مشکل کام ہے میں آ پ کا درد سمجھ سکتا ہوں اسی لیے شاید اللہ اور اسکے رسول نے صبر والے کے لیے اچھا اجر رکھا ہے ٓاپ بھای کے لیے ذیادہ سے ذیادہ کار
    خیر کے کام کریں اور اسنکے لیے دعا مغفرت فرماءیں اللہ انکی منزلیں ٓاسان فرماءیں
  8. اوہ بہت افسوس ہوا اللہ پاک انکی مغفرت کرے اور آپ سب کو خصوصا آپکی امی جان کو صبر عطا فرمائے کہ اولاد کے دکھ سے بڑھ کر کوئی دکھ نہيں ميری کسی بيٹی کو ہلکی سی چوٹ بھی لگ جائے تو مجھے بخار چڑھ جاتا ہے تو آپکی امی کی حالت کا سوچتی ہوں تو کانپ جاتی ہوں يہ تو ايسا درد ہے جو بزی رہنے سے بھی کم نہيں ہوتا اندر ہی اندر انسان گھلتا رہتا ہے اللہ پاک آپکی امی کو صبر دے اور برداشت کا حوصلہ کہ جانے والے واپس نہيں آتے
  9. عاشئہ یہ دکھ تو ایسا ہے جو نہ بھولنے والا لیکن اللہ کی مرضی کے آگے ہم کیا کر سکتے ہیں جب اپنے پیارے چھوڑ کر جاتے ہیں تو یہی لگتا ہے ہم بھی زندہ نہیں رہ پاہیں گے لیکن شاہد ایسا نہیں ہوتا۔۔اللہ پاک سے دعا ہے کہ بھائی کو جنت میں اعلی مقام عطا فرمائے آپ کو امی جان کو اور سب گھر والوں کو صبر جیمل
  10. ایسے مواقع زندگی میں آتے ہیں۔ نوجوان ماموں کا انتقال ہوا تھا تو پہلی دو عیدیں تو کاٹنا مشکل ہو گیا۔ عید الفطر کی نماز پڑھ کر گھر آئے تو گھر کاٹنے کو دوڑ رہا تھا۔ ہر کوئی کونوں کھدروں میں بیٹھا سسک رہا تھا۔ کسی میں نظریں ملانے کی تاب نہ تھی۔ وہ واقعی ایسے غمناک ایام تھے کہ زندگی سے دل ہی اٹھ گیا تھا۔ اللہ مرحوم کی مغفرت کرے۔ بھائی کا غم ماموں سے یقینا کہیں زیادہ ہوتا ہے۔ اللہ آپ کو بھی ہمت دے، وقت بہت بڑا مرہم ہے۔ اتنا کیجیے کہ اگر وہ کوئی اہم کام ادھورا چھوڑ گئے ہیں
    اور آپ وہ کر سکتی ہیں تو اسے مکمل کیجیے، بہت دلی سکون ملے گا۔ آخر میں ایک مرتبہ پھر مرحوم کی مغفرت کے لیے دعا کروں گا۔

  11. asma i am living in UK but life over here is hell. what and how ever pakistan is it is a heaven at least you are mentally satisfied in your mother land and now regarding relationships, i agree with you the less importance you will give to people the more happy will you be, the only people important are parents, life partner, your own children and your brothers and sisters till they are not married. once they get married they had their own life but still these people are the dearest one and leave everyone else rather dam care about them. our prayers are with you ayesha, may your brother soul rest in peace and Allah gave you the strength to bear this loss aameen.

Leave a Reply